جناب اعجاز حیدر کی’’عکسِ موقوف‘‘پر خراجِ تحسین۔۔۔ ڈاکٹر سعید اقبال سعدی

لکھی ہے ’’عکسِ موقوف‘‘اس طرح اعجاز حیدر نے
سخن کا کر دیا ہے حق ادا اعجاز حیدر نے
یہ ہے اعجاز اس کے نام کا یہ پھر سخن گوئی
دیا ہر شعر کو لہجہ نیا اعجاز حیدر نے
بڑی قدرت ہے فنِ شعر گوئی پر اسے حاصل
لکھا جو کچھ،لکھا ہے بر ملا اعجاز حیدر نے
روایت اور جدًت کو دکھائی ہیں نئی کرنیں
رموزِ شعر کو دی ہے ضیا اعجا حیدر نے
ردیفیں،قافئے،بحریں سبھی کچھ منفرد اس کا
تخیل کو نئی بخشی جلا اعجاز حیدر نے
خزاں بھی اوڑھ کر پھرنے لگی رنگوں کے پیراہن
بنائی شاعری میں وہ فضا اعجاز حیدر نے
سخن کے شہر میں کرنیں بکھیریں پیار کی اس نے
جلایا ہے محبت کا دیا اعجاز حیدر نے
بڑی تہذیب سے کچھ طنزیہ نشتر چلائے ہیں
مگر لکھا نہیں کچھ بھی بُرا اعجاز حیدر نے
دیارِ غیر میں ہے احترام اس کا بہت سعدیؔ
بنائی ہے ہر اک دل میںجگہ اعجاز حیدر نے

اپنا تبصرہ بھیجیں