لکھاری متوجہ ہوں

ادارہ “الف اردو” کو تحریر یونیکوڈاردویا ان پیج فارمیٹ میں بھیجی جا سکتی ہے
“الف اردو” کسی بھی موضوع پر لکھے گئے مضمون کو قبول کر سکتا ہے۔ تمام مضامین طبع زاد ہونے چاہئیں اور مصنف کی طرف سے خود ارسال کئے جانے چاہئیں۔
“الف اردو” ایسے مضامین کو اولین فرصت میں شائع کرنے کو ترجیح دیتا ہے جو پہلے کسی دوسرے آن لائن پیپر، فیس بک یا اخبار وغیرہ میں نہ شائع کئے جا چکے ہوں۔
ادارہ “الف اردو” مضامین کی ایک بڑی تعداد اور کم وسائل کے سبب انفرادی طور پر تمام موصولہ پیغامات کا فرداً فرداً جواب دینے سے قاصر ہے۔ اگر آپ کا مضمون موصول ہونے کے تین دن کے اندر اندر آپ کو ادارے کی جانب سے جواب موصول نہ ہو تو سمجھ لیجیے کہ ہم آپ کا مضمون شائع کرنے سے قاصر ہیں۔
“الف اردو” ایسے مضامین شائع نہیں کرتا جو دو ممالک، گروہوں، فرقوں اور افراد کے درمیان باہمی منافرت کو ہوا دینے کا سبب بنیں۔
اگر کسی بھی وجہ سے “الف اردو” آپ کی تحریر شائع نہیں کرتا ہے تو برائے مہربانی اپنی تحریر کی اشاعت کے لئے اصرار مت کریں۔ کسی تحریر کو شائع کرنے یا نہ کرنے کا صوابدیدی اختیار صرف اور صرف‘ “الف اردو” کی ادارتی ٹیم کا ہی ہے اور اس معاملے میں ادارتی ٹیم کا فیصلہ حتمی تصور کیا جائے۔
ویب سائٹ پر کسی مضمون کی اشاعت کے بعد اگر ادارہ محسوس کرے کہ مضمون ویب سائٹ کی ادارتی پالیسی کے خلاف ہے یا مطلوبہ معیار پر پورا نہیں اترتا ہے تو متعلقہ تحریر کو سائٹ سے حذف کرنے کا اختیار ادارہ کو حاصل ہے۔
تحریر بھیجنے سے پہلے اس بات کو یقینی بنا لیں کہ آپ نے اپنے مضمون کی پروف ریڈنگ کرلی ہے اور اسے قواعد و املا کی تمام غلطیوں سے پاک کردیا ہے۔ بسا اوقات ایک اچھی تحریر بھی کمپوزنگ کے غیر معیاری ہونے کی وجہ سے مسترد کی جا سکتی ہے۔
“الف اردو” گمنام مصنفین کے نام سے تحریرں شائع نہیں کرتا ہے ۔ مصنف کی شناخت ادارتی عملے کے لئے اہم ہے۔ یہ ممکن ہے کہ آپ لکھنے کے لئے ایک قلمی نام اختیار کرلیں، لیکن ادارے کو آپ کی اصل شناخت کا علم ہونا چاہیے۔
شناخت کے علاوہ ہمیں مضمون کے ساتھ شائع کرنے کے لئے مصنف کی تصویر بھی چاہیے ۔
اپنی تحریر اور تصویرادارے کے ای میل ایڈریس alifurdublogs@gmail.comپر ارسال کریں۔