آکسفورڈ یونیورسٹی کی تیار کردہ کورونا ویکسین کے مثبت نتائج آنا شروع

لندن (نیوز ڈیسک)آکسفورڈ یونیورسٹی کی جانب سے تیار کردہ کورونا وائرس کی ویکسین کے مثبت نتائج سامنے آنا شروع ہوگئے ہیں۔غیر مکی خبر رساں ادارے کے مطابق آکسفورڈ یونیورسٹی کے محققین کی جانب سے تیار کی جانے والی ایک ممکنہ کورونا وائرس کی ویکسین اکتوبر میں ریلیز کی جارہی ہے، یہ ویکسین ممکنہ طور پر کوویڈ 19 کے مریضوں کیلئے مددگار ثابت ہوگی کیونکہ یہ جسمانی مدافعتی نظام کے ردعمل کو کم کرتی ہے، اس ویکسین کو کورونا کے بدترین اثرات کی روک تھام کیلئے مؤثر قرار دے دیا گیا ہے۔ممتاز سائنسدان اور آکسفورڈ یونیورسٹی کے جینر انسٹی ٹیوٹ کے ڈائریکٹر و پروجیکٹ لیڈر

پروفیسر ایڈرین ہل نے کہا ہے کہ آکسفورڈ کی ویکسین اکتوبر میں ریلیز ہوجائیگی اس کے آزمائشی تجربات امید افزا ثابت ہوئے ہیں۔تفصیلات کے مطابق ویکسین نے جانوروں میں بہت اچھے نتائج ظاہر کیے ہیں جس کے بعد محققین انسانی آزمائشوں کے اگلے مرحلے میں داخل ہوچکے ہیں۔آکسفورڈ کی ویکسین جسے سی ایچ اے ڈی او ایکس ون کوویڈ19 کا نام دیا گیا ہے اسے فارما سیوٹیکل گروپ آسٹرا زینیکا کے ساتھ مل کر تیار کیا گیا ہے، اسے پہلے مرحلے میں برازیل میں رضاکاروں پر آزمایا جارہا ہے۔واضح رہے کہ دنیا بھر میں کورونا وائرس سے اموات کی تعداد 5 لاکھ ایک ہزار سے تجاوز کر گئی جبکہ متاثرہ افراد کی تعداد 1 کروڑ 82 ہزار سے زائد ہو گئی ہے۔ کورونا وائرس سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 54 لاکھ 58 ہزار سے زائد ہوگئی ہے۔ دنیا بھرمیں کورونا سے متاثرہ 57 ہزار 706 افراد کی حالت تشویشناک ہے۔امریکہ میں کورونا سے مزید 512 افراد جاں بحق ہو گئے جس کے بعد جاں بحق ہونے والوں کی مجموعی تعداد ایک لاکھ 28 ہزار سے بڑھ گئی ہے۔ امریکہ میں 25 لاکھ 96 ہزار سے زائد افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔برازیل امریکہ کے بعد 12 لاکھ سے زائد کورونا کیسز والا دوسرا ملک بن گیا ہے جہاں کورونا سے مزید 994 افراد کی ہلاکت کے بعد اموات کی تعداد 57 ہزار ایک سو سے زائد ہو گئی ہے جبکہ کیسز کی تعداد 13 لاکھ 15 ہزار سے تجاوز کر گئی ہے۔روس میں کورونا سے مزید 188 افراد کی ہلاکت کے بعد اموات کی تعداد 8 ہزار 9 سو سے تجاوز کر گئی۔ روس میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 6 لاکھ 27 ہزار سے بڑھ گئی۔