پاکستان میں 5جی ٹیکنالوجی متعارف کروانے کی تیاریاں

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)حکومت کا انفارمیشن ٹیکنالوجی میں ترقی کے لیے اہم قدم، وزیراعظم نے فایئو جی کی فائبرائزیشن کے لئے لائحہ عمل مرتب کرنے کے لئے ایک ہفتہ کی ڈیڈ لائن دے دی، بڑے شہروں میں فائبرائزیشن کے ذریعہ موبائل فون کے ٹاوروں کو جوڑا جائیگا۔ تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم انفارمیشن ٹکنالوجی کے فروغ سے متعلق ایک اجلاس کی صدارت کر کی جس میں مشیر تجارت عبد الرزاق داؤد، وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات ونشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان، آئی ٹی اینڈ ٹیلی کام کے شریک چیئرمین ڈاکٹر عطا الرحمان ، سیکرٹری برائے انفارمیشن ٹکنالوجی اور کابینہ کے اراکین نے شرکت کی۔

ملاقات کے دوران وزیر اعظم نے 5 جی اسپیکٹرم کے اجراء کے لئے لائحہ عمل تیار کرنے کی ہدایت کی جس میں بڑے شہروں میں فائبرائزیشن کے ذریعہ موبائل فون کے ٹاوروں کو جوڑنا اور آئی ٹی سیکٹر کے فروغ میں رکاوٹوں کو دور کرنے کے لئے ٹائم لائنز متعین کرنا شامل ہے۔وزیر اعظم نے کہا کہ حکومت بہتر مستقبل کے لئے ملک کے ہنرمند نوجوانوں کو ہر طرح کی مدد فراہم کرنے کے لئے پرعزم ہے۔انہوں نے آئی ٹی کے شعبے میں ملک کے وسیع تر صلاحیتوں کی بھی تعریف کی اور اعتراف کیا کہ بہتر مواقع فراہم کرنے سے حکومت لاکھوں ملازمتیں پیدا کرسکے گی۔ سکریٹری برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی شعیب صدیقی نے وزیر اعظم کو پاکستان میں انفارمیشن ٹکنالوجی کے فروغ کے لئے وزارت کے مختلف اقدامات کے بارے میں آگاہ کیا۔ اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے نمائندے نے وزیر اعظم کو بتایا کہ غیر ملکی ترسیلات زر کو آزاد کرنے والوں کے لئے پچیس ہزار ڈالرز تک بڑھا دینے سے متعلق فیصلے پر عمل درآمد کا مقررہ عمل چند روز میں مکمل کرلیا جائے گا۔انکا کہنا تھا کہ فری لانسرز کو ان کی غیر ملکی کمائی پر زیادہ سے زیادہ مراعات دی جائیں گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ فری لانسرز کے لئے بینکوں کی شرح سے مقامی کرنسی میں غیر ملکی کرنسی کا تبادلہ کیا جائے گا۔