پاکستان نے براق کا سیلکس گلیلیو ٹیکنالوجی سے لیس جدید ترین ورژن لانچ کردیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان نے سیلکس گلیلیو ٹیکنالوجی سے لیس براق ڈرون کا جدید ترین ورژن لانچ کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق جدید براق ڈرون 15ہزار فٹ کی بلندی سے کسی بھی ٹارگٹ کو میزائل سے صحیح نشانہ بنا سکے گا۔ اس میں استعمال ہونے والے میزائل بھی پاکستان میں تیار کر لیے گئے ہیں۔ براق کو اب جنگی مقاصد کے لیے استعمال کیا جائے گا۔اس طیارے کو اینٹی ٹینک میزائلوں سے بھی لیس کیا گیا ہے۔ یہ طیارہ براق لیزر گائیڈڈ میزائلوں سے لیس ہوگا۔ اس طیارے میں اپنے ہدف کو نشانہ بنانے والی صلاحیت کو مزید بہتر کیا گیا ہے جبکہ پہلی مرتبہ اس طیارے کو جنگی مقاصد کے لیے بھی استعمال کیا جا
سکے گا۔ چونکہ یہ طیارہ کم قیمت ہے اور اس کے آپریشنل اخراجات بھی کم ہیں، اس لیے اس طیارے کو خاص طور پر دہشتگردوں کے خلاف آپریشنز میں استعمال کیا جا سکے گا۔واضح رہے کہ پاکستان محدود وسائل ہونے کے باوجود تیزی سے اپنی دفاعی ضروریات پوی کرنے کے معاملے میں اب خود کفیل ہوتا جا رہا ہے۔ حالیہ برسوں کے دوران پاکستان کی دفاعی انڈسٹری نے زبردست ترقی کی۔ اسلحہ سازی کے شعبہ میں پاکستان نے کچھ برسوں کے دوران خاصی مہارت حاصل کرلی ۔ اور جے ایف 17 تھنڈر جنگی طیارے، ڈرون طیارے، جدید الخالد ٹینک اس کا واضح ثبوت ہیں۔خاص طور پر پاکستان اور چین کی جانب سے مشترکہ طور پر تیار کیے جانے والے جے ایف 17 تھنڈر جنگی طیاروں نے دنیا بھر میں خاصی مقبولیت حاصل کی۔ 27 فروری کو بھی جے ایف 17 تھنڈر طیارے نے ہی بھارتی طیاروں کو مار گرایا تھا جس کے بعد جے ایف 17 تھنڈر طیاروں کی عالمی مارکیٹ میں مانگ میں بھی اضافہ ہوا۔ جبکہ کچھ ممالک جے ایف 17 تھنڈر جنگی طیارے کی خریداری کے لیے پاکستان کے ساتھ معاہدہ بھی کر چکے ہیں۔واضح رہے کہ پاکستان کی دفاعی قوتوں نے روز بروز اضافہ ہوتا جا رہا ہے جس نے دشمن کو بھی پریشان کر کے رکھ دیا ہے۔ رواں ماہ کے آغاز میں بھی پاکستان اور چین نے جے ایف 17 تھنڈر کے جدید ترین ورژن ’’بلاک 3‘‘ کے ڈیزائن کو حتمی شکل دی تھی ،جس کے تحت جے ایف 17 تھنڈر اپ گریڈیشن کے بعد چوتھی نسل کے لڑاکا طیاروں سے بھی زیادہ جدید ہوجائے گا اور اپنی صلاحیتوں میں امریکی ایف 16، ایف/اے 18 اور ایف 15؛ روس کے سخوئی 27؛ اور فرانس کے میراج 2000 جیسے مشہور لڑاکا طیاروں تک کو پیچھے چھوڑ دے گا۔