کوروناوائرس کی تیزی سے پھیلتی وباء، کیا سعودی حکومت نے حج منسوخ کردیا ہے

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)پاکستان میں سعودی سفیر نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی وبا کے باوجود حج منسوخی کا ابھی تک کوئی فیصلہ نہیں ہوا اور اگر اس طرح کا فیصلہ کیا گیا تو سعودی حکومت اسے بروقت حاجیوں تک پہنچائے گی۔سعودی سفیر نواف بن سعید المالکی کی کا کہنا ہے کہ میں سب کو یقین دہانی کروانا چاہوں گا کہ خدائے بزرگ و برتر نے ہماری دانشمندانہ حکومت کو حرمین شریفین اور اللہ کے مقدس گھر حاضر ہونے والے حجاج کی خدمت کی توفیق بخشی ہے۔اور یہ حکومت بلاشبہ ہمیشہ ہر سال حجاج کے لیے بہترین خدمات پیش کرنے کی کوشش کرتی ہے اور ان کے تحفظ کے لیے بھی ہمیشہ کوشاں رہتی ہے۔

میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ حج کو منسوخ کرنے کا کوئی فیصلہ اب تک بالکل نہیں کیا گیا۔ان سے سوال کیا گیا کہ پاکستان میں سعودی اقامہ رکھنے والے کئی لوگ پروازوں کی منسوخی کی وجہ سے سعودی عرب نہیں جاسکتے تو کیا ان کی نوکری محفوظ رہے گی؟ جس کا جواب دیتے ہوئے سعودی سفیر نے کہا ایسے تمام لوگ جن کے پاس نافذ العمل اقامہ اور قانونی ایگزیکٹ موجود ہے وہ پروازوں کی بحالی کے بعد سودی عرب واپس جا سکیں گے۔جب کہ دوسری جانب وفاقی وزیر مذہبی امور نے حج انتظامات بارے وضاحتی بیان میں کہاہے کہ سوشل میڈیا پر حج روکنے کی خبر میں کوئی صداقت نہیں۔ انہوںنے کہاکہ حج انتظامات معمول کے مطابق جاری ہیں،ہم سعودی وزارت حج و عمرہ سے مسلسل رابطے میں ہیں۔ پیر نور الحق قادری نے کہاکہ سعودی عرب نے حج انتظامات روکنے سے متعلق کوئی حکم جاری نہیں کیا،سعودی حکام ایسے اعلان سے پہلے بڑے مسلم ممالک سے مشاورت کرے گی۔وزیر مذہبی امور نے کہاکہ سعودی وزارت حج نے ٹرانسپورٹ اور ہوٹل/بلڈنگ حتمی معاہدہ فی الحال موخر کرنے کا مشورہ دیا ہے۔انہوںنے کہاکہ فی الحال حج نہ ہونے کی بات قبل از وقت ہے ۔ انہوںنے کہاکہ اللہ تعالی سے امید ہے کہ حج کے ایام تک صورت حال بہتر ہو جائے گی۔پیر نور الحق قادری نے کہاکہ مصدقہ اطلاعات کیلئے وزارت کے آفیشل سوشل میڈیا کو فالو کریں۔