خاتون 33سالوں سے لاعلمی میں اپنے ساتھ کروڑوں کے ہیرے لیے پھرتی رہی،سیل سے 1800میں خریدی گئی انگوٹھی کی قیمت کتنے کروڑ روپے نکلی، خاتون خوشی سے نہال

اسلام آباد (نیوز دیسک) خاتون لاعلمی میں 33 سالوں سے ایک انگوٹھی پہن کر پھر رہی تھی لیکن اسے معلوم نہ تھا کہ یہ انگوٹھی کتنی قیمتی ہے۔ 55 سالہ خاتون نے برسوں قبل سیل سے شیشے کے نگینے والی انگوٹھی خریدی جب جیولر کے پاس گئی تو یہ جان کرخوشی سے اچھل پڑی کہ دس پاؤنڈ میں خریدے جانے والی انگوٹھی دراصل ہیرے کی ہے جس کی مالیت 13 کروڑ روپے ہے۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ برطانیہ میں ایک خاتون نے قریباَ 30 سال قبل شیشے کے نگینے والی ایک انگوٹھی خریدی لیکن اتنے سالوں بعد جب وہ اسے فروخت کرنے گئی تو خاتون انگوٹھی کی قیمت جان کر دنگ رہ گئی۔ڈیبرا گوڈرڈ نامی اس خاتون نے یہ انگوٹھی ایک سیل سے محض دس پاؤنڈ میں خریدی تھی۔کچھ عرصہ تک تو وہ اس انگوٹھی کو پہنتی رہی اور پھر انگوٹھی کو اسے زیورات کے ڈبے میں رکھ دیا جہاں یہ گذشتہ 20 سال سے پڑی تھی۔کچھ روز

قبل ڈیبرا کی ماں ایک آن لائن فراڈ کا شکار ہوئی اور اپنی ساری جمع پونجی سے ہاتھ دھو بیٹھی۔جس کے بعد ڈیبرا نے اپنی والدہ کی مدد کرنے کا سوچا اور یہ انگوٹھی فروخت کرنے کے لیے جیولرز کے پاس لے گئی۔جب جیولر نے یہ قیمتی انگوٹھی دیکھی تو حیرت سے خاتون سے پوچھا کہ تمہیں نہیں معلوم کہ یہ کیا ہے؟ ڈیبرا نے نفی میں سر ہلایا تو جیولر نے بتایا کہ یہ اصلی ہیرا ہے اور اس کی قیمت اس وقت 7 لاکھ 40 ہزار پاؤنڈ ہیں۔(جو کہ پاکستانی قریباََ 13 کروڑ روپے بنتے ہیں)ڈیبرا کا کہنا تھا کہ جیولر کے منہ سے یہ بات سنتے ہی میں اچھل کر اپنی کرسی سے کھڑی ہو گئی۔مجھے یقین ہی نہیں آرہا تھا کہ اتنے عرصے میں کروڑوں روپے کی انگوٹھی ہاتھ میں پہنے پھر رہی تھی۔اور مجھے اس کی اصل مالیت کا اندازہ نہیں تھا۔55 سالہ ڈیبرا کا کہنا تھا کہ میں جیولر سے یہ انگوٹھی واپس لے کر گھر آ گئی اور رات بھر بیٹھ کر اسے دیکھتی رہی۔